پنجاب میں مزدوروں کی کم سے کم اجرت 20 ہزار روپے مقرر

لاہور (اے ایف بی) پنجاب میں مزدوروں کی کم سے کم اجرت20ہزارروپے مقرر کردی گئی ، حکومت آئندہ بھی مزدوروں کیلئےتاریخ سازاقدامات کرےگی، 7.25ارب سےٹیلنٹ اسکالرشپ ،شادی ،اموات پرگرانٹ دی جا رہی ہے جبکہ لاہور،ملتان،ننکانہ صاحب میں مزدوروں میں 1296 فلیٹس الاٹ کئے گئے ہیں۔ وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے یوم مزدور کے موقع پر ویڈیو پیغام میں کہا ہے کہ یکم مئی محنت کش طبقےکی خدمات کا دن ہے، حکومت پسماندہ اور محنت کش طبقےکی فلاح و بہبودکیلئےکوشاں ہے، اسپتالوں میں مزدوروں، انکےاہلخانہ کو سہولتیں فراہم کی جارہی ہیں۔

،عثمان بزدار کا کہنا تھا کہانھوں نے کہا کہ کوروناکےپیش نظرمحنت کشوں کادن سادگی سےمنارہےہیں، وطن عزیزہم سےگھروں میں رہنےکاتقاضاکرتاہے، محنت کش ہمارےہیروہیں جورزق حلال کماکرمعیشت مضبوط کرتےہیں۔ 1886کو شکاگومیں محنت کشوں نے حقوق کیلئےلازوال قربانیاں دیں، یہ دن جبرواستبدادکےخلاف شکاگوکےشہداکی جدوجہدیاددلاتا ہے، دین اسلام محنت کش کی عظمت اورفلاح وبہبودکادرس دیتاہے۔انھوں نے مزید کہا کہ نیا پاکستان محنت کشوں اورمزدوروں کاپاکستان ہے، ماضی میں محنت کشوں کووعدوں پرٹرخایاگیا، سابق ادوارمیں مزدوروں کی فلاح کیلئےعملی اقدامات نہیں کئے گئے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں

Protected with IP Blacklist CloudIP Blacklist Cloud